Advertisement

Find Us On FB

Tags

urdu news
Latest News
Malakand News
bbc News
peshawar news
Dharna news
imran khan news
geo news
ary news
swat news

Advertisement

News Detail

Publisher Name : Gohar ali Gohar (Comments) Date : 2016-11-05

ملاکنڈ کے بوائیز سکولوں میںسہولیات کا فقدان ، سکولوں میں موجود طلبہ، کی تعداد اور سہولیات پر مبن مبنی مفصل رپورٹ

صوبائی حکومت کی طرف سے تعلیمی ایمرجنسی کے باوجود ضلع ملاکنڈ کے سرکاری سکولوں میں سہولیات کا فقدان ہے جس کی وجہ سے والدین کا گورنمنٹ سکولوں پر اعتماد بحال نہیں ہوسکا ضلع بھر میں گورنمنٹ سطح پر لڑکوں کے لئے چار ہائیر سیکنڈری، پینتالیس ہائی ، اکتیس مڈل اور تین سو پینتیس پرائمری سکولوں میں ٹوٹل 70203 طلبہ زیر تعلیم ہے جبکہ دور افتادہ پہاڑی علاقوں میں لڑکوں کے پرائمری سکولوں میں 14079 لڑکیاں بھی مخلوط کلاسیں لے رہی ہیں جس کے ساتھ ٹوٹل طلبہ اور طالبات کی تعداد 84282 ہے ڈی ای او افس ملاکنڈ کے ریکارڈ کے مطابق لڑکوں کے 415 سکولوں میں ٹوٹل 1664 کلاس رومز ہیں جس کی وجہ سے ایک ایک کلاس میں اسی سے سو تک طلبہ کو داخل کرانا پڑتا ہے تعلیمی پالیسی کے مطابق چالیس طلبہ کلاس کی حساب سے مذکورہ طلبہ کے لئے 2107 مزیدکمروں کی ضرورت ہے دستاویزات کے مطابق ضلع ملاکنڈ کے آٹھ ہائی اور 28 مڈل سکولوں میں پلے گراؤنڈز کی سہولت موجود نہیں بیس پرائمری سکول بغیرعمارت کے قائم ہیں 24 مڈل سکول صرف تین تین 99 سکول دو دو کمروں پر مشتمل ہے حکومت کی پرائمری سکول پالیسی کے مطابق صرف پچیس سکولوں میں چھ چھ کمرے موجود ہیں دس سکولیں ایک ایک کمرے میں بچوں کو زیور تعلیم سے اراستہ کررہی ہیں جبکہ سولہ سکولوں میں مطلوبہ کمروں کی تعداد سے بھی زیادہ سات سے دس تک کمرے موجود ہیں ایک پرائمری سکول اپر بٹ خیلہ میں ٹوٹل 16 کمرے ہیں جوکہ بیشتر ہائی اور مڈل سکولوں سے بھی کمروں کی تعداد میں زیادہ ہے اور سکولوں میں کمروں کی تعمیر کی منظوری کی پالیسی سے متعلق کھلا سوال ہے دستاویزات کے مطابق تمام سکولوں میں 2846 اساتذ ہ جبکہ کلیریکل سٹاف اور درجہ چہارم ملازمین کی کل تعداد 727 ہے اے ڈی ای او ملاکنڈ فضل سبحان نے سکولوں میں سہولیات کے فقدان کے حوالے سے بتایا کہ موجودہ صوبائی حکومت میں مختلف سکولوں میں سہولیات فراہمی کا سلسلہ شروع ہوچکا ہے گزشتہ سال پرائمری ٹیچر کونسل â پی ٹی سیá کے ذریعے مختلف سکولوں میں 97 مزید کمروں کی تعمیر57 سکولوں کی باونڈری والز63 گروپ لیٹرین پرکام مکمل ہوچکا ہے 96 سکولوں کی بجلی ، 154 گروپ لیٹرین ، 20 باونڈری وال ،121 واٹر سپلائی اور 438 سکولوں میں سولر سسٹم کی تنصیب پر اس سال کام جاری ہے انہوں نے کہا کہ مختلف سکولوںمیں پچاس نئی کمروں کی تعمیر ، ایک بجلی ، چار واٹر سپلائی دس گروپ لیٹرین اور سولہ سکولوں کی باؤنڈری وال کی تعمیر کے لئے ڈی سی ملاکنڈ افس میں فائل منظوری بھیج دیا گیا ہے جس پر جلد کام شروع ہوگا۔ بغیر عمارت کے پرائمری سکولوں کے بارے میں انہوںنے کہا کہ یہ مکتب سکولیں تھی جنہیں مختلف پرائمری سکولوں میں ضم کردیا گیا ہے اس میں صرف چھ مکتب سکول باقی ہیں جن کے لئے بھی جلد از جلد عمارتوں کا انتظام کیا جائیگا